Background Image

ہمارى خيريں

"مناسك " وہ پہلى طے شدہ اكىڈمى ہے جو فاصلاتى نظام كے تحت مناسك كى تعليم كے لئے خاص ہے

"مناسك " وہ پہلى طے شدہ اكىڈمى ہے جو فاصلاتى نظام كے تحت مناسك كى تعليم كے لئے خاص ہے

3:25 ص الجمعة 5 ذو القعدة 1438 هـ

اكيڈمى كے  چيف ايگزيكٹو أوفيسر جناب  الشيخ طلال بن أحمد العقيل نے كہا كہ مناسك اكىڈمى ،سعودى وزارت مذہبى امور كے تكنيكى منصوبوں كى ايك كڑى ہے ، اور انہوں نے اس بات پر زور ديا كہ ٹكنيكل اكيڈمى   كا يہ منصوبہ ، پورى دنيا ميں انٹرنيٹ كے ذريعہ مناسك حج و عمرہ اور زيارات كى تعليم وتربيت ميں سنگ ميل ثابت ہوگا ۔

اور يہ اكيڈمى وزارت كے ان سلسلہ وار پروگراموں كى ايك كڑى ہے جو  مسلمانوں كى حج كے  اس مبارك سفر ميں  نبى صلى اللہ عليہ وسلم كى تعليمات كے مطابق راہنمائى كرنے كے ليئے پيش كيئے جاتے ہيں ۔

وزير مذہبى امور كے مشير جناب الشيخ طلاق العقيل نے مزيد كہا كہ يہ اكيڈمى  مناسك حج كى تعليم وتربيت حاصل كرنے والوں كے ليئے اور خصوصا آٹھ مختلف بين الأقوامى زبانوں ميں دروس  پر مشتمل  يہ منصوبہ جس كى تيارى اور پيشكش ميں قابل اعتماد دينى علوم كا تخصص ركھنے والے اور اكيڈمك تعليم كے ماہر اور  حجاج كرام كى راہنمائى اور تعليم وتربيت ميں مہارت ركھنے والے علماء كرام نے  بھرپور كردار ادا كيا ہے اور پھراس منصوبے سےبلكل مفت  استفادہ كى دستيابى كى حيثيت سے پورى دنيا  ميں موضوع سخن اور مشہور ہوگى۔

نيز شيخ عقيل نے توقع ظاہر كى كہ1438ھ كے شہر ذوالقعدہ كے پہلے ہفتے يہ اكىڈمى لانچ كردى جائے گى تاكہ امسال انے والے موسم حج ميں اس سے بھرپور استفادہ كيا جاسكے ۔

اور مزيد كہا كہ يہ منصوبہ  محترم المقام خادم حرمين شريفن الملك سلمان بن عبد العزيز اور ان كےبااعتماد  اور گرامىء قدر جناب ولى عہد كى ذاتى دلچسپيوں كا نتيجہ اور ان كے 2030ھ كے پروگرامز كے ہم آہنگ ہے ۔ 

اور معالى مستشار نے يہ عنديہ بھى ديا كہ يہ اكيڈمى اپنے پہلے مرحلےميں  بنيادى زبانوں ميں مناسك حج سكھانے كا كردار ادا كريگى اور وقت كے ساتھ ساتھ وسعت پذير ہوتى رہيگى تاكہ دنيا كى مختلف زبانوں ميں خدمات پيش كى جاسكيں ۔

اور شيخ عقيل نے اس بات پر زور ديتے ہوئے كہا كہ وزارت نے پروگرامنگ اور ٹيكنالوجى كے ماہر اور نظام تعليم ميں وسيع تجربہ اور پيشہ وارانہ مہارت ركھنے والے حضرات  كے توسط سے اس اكىڈمى كى بنياد ركھى ہے   اور اسے تخليقى اور منفرد اور نئے انداز ميں پيش كرنےاور اس ميں مسلسل بہترى اورجدت لانے كے ليئےجديد فن اور  ہر قسم كى نئى ٹيكنالوجى  كو بروئے كار لانے   كا تہيہ كر ركھا ہے تاكہ جديد عصرى  وسائل كے ذريعے بين الأقوامى زبانوں ميں مناسك كى تعليم وتربيت كى معلومات پورى دنيا تك پہنچانے كا  خواب شرمندہ تعبير ہوسكے  ۔

انہوں نے اس بات پر زور ديا كہ وزارت  نے اس اكىڈمى كى تيارى و استوارى ميں ٹيم ورك  پر زور ديا  اور اركان اسلام كى شرح اور خاص كر فريضہء حج كے احكام ومسائل ميں  نہايت شرح وبسط سے كام ليتے ہوئے ہر وہ طريقہ اورذريعہ بروئے كار لائے جس سے حج اور عمرہ كى تعليم وتربيت بااعتماد اور  نہايت سہل ، آسان كركے پيش كى جاسكے ، اس مقصد كے ليئے خودكار نظام كى مسلسل تحسين كى جائيگى ،تمام صلاحيتوں اور  مختلف وسائل كو بروئے كار لايا  جائيگا ۔

انہوں نے مزيد وضاحت كى كہ اس اكىڈمى كو فعال اور مزيد دلچسپ بنانے كے ليئے اس ميں سلسلہ وار پروگرامز اور مذاكرات، اور متوازن سلسلے شروع كيئے جائينگے جو كہ مملكت سعودى عرب كى حكيم قيادت  كے جذبات كے ہم آہنگ ہونگے جوكہ حجاج كرام كى خدمت ميں كوئى دقيقہ فروگزاشت نہيں كرتى ۔

انہوں نے يہ بھى وضاحت كى كہ مناسك اكيڈمى ميں مرحلہ وار منصوبے  شروع كيئے جائيں گے كہ جس ميں صارف كو  ، اعتدال اور زمان ومكان كى حرمت كو مد نظر ركھتے ہوئے كتاب وسنت كے عين مطابق  تعليم دى جاسكے ، اور شيخ طلال نے مناسك حج كى تعليم وتربيت دينے والى اس اكيڈمى كے  اہداف و مقاصد كے مندرجہ ذيل مراحل بيان كيئے ۔

šسلف صالح اور علماء كرام كے منہج كے مطابق مناسك حج ، عمرہ اور زيارت كى شرح ۔

š مختلف كورسز ، دروس ، اور ٹيلويژن پروگرامزآوڈيو اور وىڈيو كلپز كى صورت ميں ، أركان اسلام ، اركان إيمان ، اور اركان احسان ، اقدار و اخلاق ، سيرت نبوى ، علوم قرآن كى شرح  ۔

اور انہوں نے يہ أميد ظاہر كى كہ يہ اكىڈمى تمام تعليمى ميدانوں ميں ايك كليدى تعليمى ميدان كے طور پر ابھرے گى جو كہ نشر ِعلوم ، خصوصا  حجاج كرام كو حج اور عمرہ كے احكام ، مسائل و واجبات اور اركان ، عقيدہ اور احكام شريعت سكھانے ميں اور حجاج كرام كى علم و آگہى كے ذريعے ان كى  راحت ، ان كے امن وامان   كے حصول ميں سنگ ميل ثابت ہوگى ۔

معالى وزير كے مستشار خاص امور حج و عمرہ اور ميڈيا ،  جناب الشيخ العقيل نے بتايا كہ يہ اكيڈمى "وسائط المناسك" يعنى "مناسك ميڈيا" نامى ايك فرى  ايپليكيشن كے ذريعے اپنى خدمات ،عربى ،انگلش، تركى، انڈونيشى ، ہوسوى، سواحلى، أردو، اور بنگالى زبانوں ميں پيش كريگى تاكہ زيادہ سے زيادہ لوگوں تك رسائى حاصل كركے انہيں ہر جگہ، سمارٹ فون ، ليٹ ٹاپ ،ٹيب وغيرہ كے ذريعے حجاج كرام كى تعليم و تربيت اور علم آگہى كے اس پروگرام سے  مستفيد كيا جاسكے ۔